Official Website of Allama Iqbal
  bullet سرورق   bullet سوانح bulletتصانیفِ اقبال bulletگیلری bulletکتب خانہ bulletہمارے بارے میں bulletرابطہ  

منہاج یونیورسٹی لاہور میں حسانؓ بن ثابت سینٹر فار ریسرچ ان نعت لٹریچر اور نعت فورم انٹرنیشنل کے باہمی اشتراک سے دوسری قومی ادبی نعت کانفرنس 2023 کا انعقاد

منہاج یونیورسٹی میں 12؍ مارچ 20۲3 کو دوسری قومی ادبی نعت کانفرنس منعقد ہوئی۔ یہ کانفرنس منھاج یونیورسٹی کے حسانؓ بن ثابت سینٹر فار ریسرچ ان نعت لٹریچر اور نعت فورم انٹرنیشنل کے باہمی اشتراک سے منعقد ہوئی۔ افتتاحی اجلاس سے پروفیسر ڈاکٹر محمد فخرالحق نوری، ڈین فیکلٹی آف لینگویجز، منہاج یونیورسٹی، سرور حسین نقشبندی، چیئرمین، نعت فورم انٹرنیشنل، ڈاکٹر ساجد محمود شہزاد، وائس چانسلر، منہاج یونیورسٹی، سید صبیح الدین صبیح رحمانی اور ڈاکٹر ریاض مجید نے گفتگو کی۔
شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہرالقادری، چیئرمین بورڈ آف گورنرز، منہاج یونیورسٹی لاہور نے کلیدی خطاب کیا جس میں انہوں نے اردو، فارسی، ترکی اور عربی نعت کی تاریخ پر روشنی ڈالتے ہوئے نعت کی مختلف جہات کو موضوع گفتگو بنایا اور دور حاضر میں نعت لٹریچر کی موثر تخلیق و پیشکش کے حوالے سے کئی نئے زاویوں اور گوشوں پر گفتگو کی۔
کانفرنس میں "صنف نعت : عقیدہ عقیدت اور فن و اسلوب کا امتزاج" کے موضوع سے پینل ڈسکشن کا انعقاد بھی کیا گیا۔ اس پینل ڈسکشن کی صدارت پروفیسر ڈاکٹر بصیرہ عنبرین، ڈائریکٹر، اقبال اکادمی پاکستان نے کی۔ پینل ڈسکشن میں ڈاکٹر عظمیٰ زریں نازیہ، ایسوسی ایٹ پروفیسر، شعبہ فارسی اورینٹل کالج پنجاب یونیورسٹی لاہور، ڈاکٹر ثمینہ گل، لیکچرار اردو، یونیورسٹی آف لاہور سرگودھا کیمپس ، رضیہ مجید، استاد شعبہ اردو، جی سی یونیورسٹی، لاہور، ڈاکٹر انیلا سلیم، اسسٹنٹ پروفیسر، اردو زبان و ادبیات اردو، پنجاب یونیورسٹی، لاہور اور صوفیہ بیدار، ایڈیٹر بکس، انچارج ای لائبریری، مجلس ترقی ادب لاہور نے اظہار خیال کیا۔
مقررین نے اپنی گفتگو میں نعت میں عقیدہ و عقیدت کے امتزاج اور اعتدال کو موضوع گفتگو بنایا اور دور حاضر میں مختلف ہئیتوں میں لکھی جانے والی اردو نعت کے بارے میں تفصیل سے اظہار خیال کیا۔ انہوں نے اس پہلو کی طرف اشارہ کیا کہ جذبے اور عقیدے کے اعتدال کے ساتھ اعلی ادبی پیراۓ اور معیارات کا لحاظ رکھتے ہوئے نعتیہ ادب کی تخلیق نہ صرف اردو ادب کو ثروت مند کر سکتی ہے بلکہ اس سے ہماری فکری اور اعتقادی اصلاح کے امکانات بھی پیدا ہو سکتے ہیں

اقبال اکادمی پاکستان