Official Website of Allama Iqbal
  bullet سرورق   bullet سوانح bulletتصانیفِ اقبال bulletگیلری bulletکتب خانہ bulletہمارے بارے میں bulletرابطہ  

انا للہ وانا الیہ راجعون
رحلت - پروفیسر ڈاکٹر محمد ایوب صابر

عہد حاضر کے معروف دانشور، ماہرِ اقبالیات پروفیسر ڈاکٹر محمد ایوب صابر آج بتاریخ ۱۷؍ نومبر، ۲۰۲۲ء قضائے الہی سے وصال فرما گئے۔ انا للہ و انا الیہ راجعون۔ ان کی عمر ۸۲ برس تھی۔
ڈاکٹر محمد ایوب صابر ۳۲ سال درس و تدریس سے وابسیہ رہے، علامہ اقبال اوپن یونی ورسٹی کے صدر شعبہ اقبالیات کے طور پر بھی فرائض سرانجام دیے۔ انھوں نے کئی کتب تصنیف کیں۔ بالخصوص تین جلدوں پر مشتمل "علامہ اقبال کی شخصیت اور فکر و فن پر اعتراضات: ایک مطالعہ" اپنی نوعیت کی منفرد تحقیق ہے، جس میں انھوں نے علامہ اقبال پر اٹھائے جانے والے اعتراضات کے انتہائی مدلل جوابات دیے۔
وہ ۲۰۰۴ء سے ۲۰۰۷ء اور ۲۰۰۷ء سے ۲۰۱۰ء تک اقبال اکادمی کی ہئیت حاکمہ کے رکن رہے۔ ۲۰۲۱ء میں انھیں تیسری مرتبہ ہئیت حاکمہ کا رکن مقرر کیا گیا۔ وہ اکادمی کے تاحیات رکن بھی تھے۔ اس کے علاوہ وہ صدارتی اقبال ایوارڈ کی مجلسِ منصفین کے رکن بھی تھے۔
ان کی علمی خدمات پر انھیں ۲۰۰۶ء میں صدارتی تمغۂ حسنِ کارکردگی اور ۲۰۲۰ء میں ستارہ امتیاز سے بھی نوازا گیا۔ ۲۰۰۳ء میں صدر اسلامی جمہوریہ پاکستان نے انھیں قومی صدارتی اقبال ایوارڈ بھی عطا کیا۔
ان کی وفات سے نہ صرف اقبال اکادمی بلکہ علامہ اقبال پر تحقیق کرنے والی پوری علمی دنیا اقبالیات کے ساتھ ساتھ علم و ادب کی دنیا ایک ممتاز محقق سے محروم ہو گئی۔ ناظم اقبال اکادمی پروفیسر ڈاکٹر بصیرہ عنبرین اور اکادمی کا تمام عملہ ان کی وفات پر نہایت دکھی ہے۔ ان کی خدمات کو خراجِ تحسین پیش کرتے ہوئے ہم اللہ رب العزت سے ان کے بلند درجات کے لیے دعا گو ہیں۔

اقبال اکادمی پاکستان